یہ میری آخری تحریر نہ ہو


یہ   میری   آخری   تحریر   نہ   ہو
آج    مرنا    میری    تقدیر    نہ   ہو
روزِ  اول   سے   ہی   ویران   رہے
ایسی   کوئی   کہیں   تعمیر    نہ   ہو

آنکھ  وہ   خواب   سدا   دیکھتی   ہے
جسکی   ممکن   کبھی   تعبیر   نہ  ہو
موت    کا    آنا    اک    حقیقت    ہے
بے   سبب   شاعرا   دلگیر   نہ    ہو

جملہ حقوق بحق مصنف محفوظ ہیں۔ مصنف کے کام کے کسی بھی حصے کی فوٹو کاپی، سکیننگ کسی بھی قسم کی اشاعت مصنف کی اجازت کے بغیر نہیں کی جا سکتی۔

Advertisements

4 تبصرے

  1. BILLU said,

    فروری 17, 2010 بوقت: 2:57 شام

    very nice

  2. ریاض شاہد said,

    فروری 17, 2010 بوقت: 10:47 شام

    ٹھیک آکھیا ای کاکا ۔ ہن تکڑا رہیں

  3. talkhaaba said,

    فروری 20, 2010 بوقت: 6:20 صبح

    اچھے اشعار ہیں ۔ کیا آپ کے اپنے ہیں؟

    • Naeem said,

      فروری 20, 2010 بوقت: 4:02 شام

      بہت شکریہ، اس بلاگ پر موجود تمام شاعری میری اپنی ہے۔


جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s

%d bloggers like this: